CS101 – Lecture 42

لیچکر نمبر 42:
انٹروڈکشن ٹو کمپیوٹنگ
دا کمپیوٹنگ پروفیشن

السلام و علیکم
کیسے ہیں آپ ؟
پچھلی دفعہ ہم نے بات کی تھی سوشل ایپلی کیشنز آپ کمپیوٹنگ کی ہم نے دیکھا تھا کہ کمپیوٹنگ کا امپیکٹ کیا رہا ہے بزنس ورک پریکٹس پہ جس پر جس طرح ہم رہتے ہیں اس پہ ایجوکیشن پے ہم نے کہا تھا کہ جناب یہ جو سوشل ایپلی کیشن نہیں ان کو اسٹڈی کرنا یہ بہت امپورٹنٹ ہے ان سے ہمیں سیکھنا چاہیے ان سے میں سبق لکھنا چاہیے کہ جو پاسٹ میں ہوا اس سے ہم کچھ سیکھیں اور اس کے مطابق مستقبل کے جو فیصل ہیں ان کو ان بہتر طریقے سے لیں۔

 تو ماضی سے سیکھ کر ہم اپنے فیوچر کو بہتر بنانا چاہتے ہیں اس لئے ماضی میں جو امپلی کیشنز ہو چکی ہیں کمپیوٹنگ کی سوسائٹی پر ان کویوز کرکے اپنا فیوچر بہتر بناسکیں۔ ہم نے پچھلی دفعہ بات کی تھی ڈائلیمہ آپ کمپیوٹنگ سکیں ہم نے بات کی تھی کہ یہ جو کمپیوٹرز ہیں یہ تو وقت کے ساتھ ساتھ زیادہ پاورفل ہوتے چلے جا رہے ہیں اور زیادہ طاقتور بہتر ہوتے چلے جارہے ہیں تو جب یہ ضرورت سے زیادہ پاورفل ہو جائیں گے اوکے اس وقت ہمارے رولز چینج ہوجائیں اور جو آج کل یہ ہمارے سرونٹس ہیں یہ ماسٹرز بن جائیں تو بجائے اس کے کہ ہمارے لئے کام کریں ہمیں ان کے لیے کام کرنا پڑے وہ ہمیں یہ سوچنا چاہیے کہ کیا واقعی ہی یہ جو پروگرس ہو رہی ہے کمپیوٹر میں یہ ہمارے حق میں بہتر ہے یا شاید نہیں ہم نے گلوبل کارپوریشن کی بھی بات کی تھی کہ انٹرنیٹ کی وجہ سے یعنی کمپیوٹنگ کی وجہ سے یہ زیادہ پاور فل ہوتی جا رہی ہیں وقت کے ساتھ ساتھ یہ اتنی زیادہ طاقتور ہو گئی ہیں شہباز کارپوریشن جو ہیں وہ کئی ملکوں سے زیادہ طاقتور اور امیر ہو گئی ہیں۔ اس کے علاوہ ایک اور ایفیکٹو کمپیوٹنگ کا ہوا وہ یہ ہے کہ آج کل کی جونئی آرگنائزیشنز اور کمپیوٹر کی جو نئی کمپنیاں ہیں دے لک موڑ گرنیٹ یعنی اکثر لوگ دوسروں سے بات کرتے ہیں اور ان کے مشورے لیتے ہیں اور یہ کہ اس میں آرگنایزیشن میں جو فیصلہ سازی ہے وہ وہ ڈسٹریبیوٹر کی ہے کے ایک بڑے صاحب ہیں اور وہی سارے ڈی سیشنز لیتے ہیں اس میں ہر آدمی اپنے لیول پر فیصلہ کر سکتا ہے اور اس کے علاوہ یہ کہ کارپوریشن کا سٹرکچر جو ہے وہ خاصہ اسلامی کیا ہے وقت کے ساتھ ساتھ کیسے تبدیل ہوتا ہے اور آپ کو پتہ ہے کہ کمپیوٹر بھی ایسے ہی ہیں بزنس جو بن رہے ہیں وہ بھی شاید انٹرنیٹ کے اسٹرکچر سے ملتے جلتے ہیں یا اس سے کچھ سیکھ رہے ہیں ہم نے یہ بھی بتایا کہ بعض کمپیوٹنگ کی فیلڈ سے ختم ہو رہے ہیں لیکن وقت کے ساتھ ساتھ باز نہیں جابز بھی کری ایٹ ہوتی جا رہی ہیں جیسے جیسے کمپیوٹر کی فیلڈ میں ایڈوانس میٹ آتی جا رہی ہے تو یہ تو ایک پروفیسر جو ازل سے ہوتا جا رہا ہے کے پرانے پروفیشن جو ہے وہ ختم ہوتے ہیں اور ان کی جگہ پر نئے پروفیشن آ جاتے ہیں ریکوری فیکٹو شاید کمپیوٹنگ کا ہی ہے وہ ہے کہ بر فورس پے ٹیمپریری ورکرز کی تعداد بڑھتی جا رہی ہے اور فل ٹائم ورکرز کی تعداد کم ہوتی جا رہی ہے اور بزنس جو ہے وہ اپنے پلائز کی ہر ایک کو مانیٹر کرتے ہیں آج کل کہ وہ کونسا بٹن دباتے ہی کس ویب سائیٹ پر جاتے ہیں کہ ای میل بھیجتے ہیں میل رسیو کرتے ہیں ایک ٹرینڈ جو کمپیوٹنگ کی وجہ سے آیا ہے وہ یہ کہ لوگوں نے گھر پے زیادہ کام کرنا شروع کر دیا ہے بجائے اس کے کہ واپس جا کے سارا کام کریں وہ گھر پہ بیٹھ کے بھی خاصے آتے ہیں اور اس کا یہ بھی ہے کہ وہ اپنے گھر والوں کے زیادہ قریب ہو جاتے ہیں کہ وہ ان کے ساتھ زیادہ بیٹھ کے زیادہ ٹائم سپنڈ کر سکتے ہیں مارکیٹینگ میں بھی کی دلچسپ تبدیلیاں آئی ہیں کمپیوٹنگ کی وجہ سے بجائے اس کے کہ ماس مارکیٹنگ ہو اب ون ٹو ون مارکیٹنگ زیادہ ہو گئی ہے یعنی کے فوکس مارکیٹنگ زیادہ ہوگئی ہے ۔ ایک آدمی کے بارے میں سوچ کے اس کے ایک انفرادی مارکیٹنگ کیمپین جو ہے وہ لائی جاتی ہے یہ کمپیوٹنگ کی وجہ سے ممکن ہوا ہے ابھی ہمارا پولیٹیکل پروسیسرز کمپیوٹنگ کی وجہ سے کوئی اتنا زیادہ تبدیل نہیں ہوا لیکن مستقبل میں یہ ہو سکتا ہے کہ مستقبل میں جو ریلیاں ہوں ان کی جگہ بڑے بڑے ڈسکشن بورڈ جو بجائے اس کے کہ بڑے مہنگے مہنگے ریفرنڈا ہوں ان کی جگہ پر بڑے مہنگے مہنگے الیکشنزہوں ان کی جگہ ہوتا ہے کہ کم ویب کے ذریعے کر لیا جائے تو یہ ہونے جا رہا ہے اب نہیں تو آج سے بیس سال کے بعد لیکن یہ ہو گا ضرور

نسلے لوگ کہتے ہیں کہ انٹرنیٹ کی کمپیوٹر کمیونیکیشن کی وجہ سے کم ہو گئے ہیں ٹیلی کمیونیکیشن اتنی سستی ہوگئی ہے کہ لوگ اس بات کی پروا نہیں کرتے کہ دوسرا شخص اسے ہم بات کر رہے ہیں وہ ان سے کتنا دور ہے اور یہ کمیونیکیشن آسانی کے ساتھ کر سکتا ہے لیکن بعض لوگوں کا خیال ہے کہ کام الٹا بھی ہو گیا ہے کہ فیملیز حالانکہ میں دوسرے کے پاس بیٹھے ہیں لیکن آپ نے اپنے ڈیوائسز پر لگے ہوئے ہیں بزی ہیں اور ایک دوسرے کو ٹائم نہیں دیتے جس کی وجہ سے ان کے آپس کے فاصلے بڑھ گئے ہیں ۔ تو فاصلے کم ہوئے لیکن ہوا کہ ڈسٹنسز بڑھ بھی گئےہیں۔ ایک عجیب و غریب چیز بھی ہے اور وہ یہ کہ پہلے جغرافیائی یا جغرافیکل بیسڈ سوسائٹی ہوا کرتی تھی کہ جہاں پر لوگوں کی ٹیڈ ہیں اس کے لحاظ سے ایک کمیونٹی بنا کرتی تھی اب انٹرسٹ بیسٹ کمیونٹیز جو ہے وہ بننا شروع ہوگئی ہیں انٹرنیٹ کی وجہ سے۔ ایک برا ایفیکٹ ہوا اور وہ یہ کہ ہماری پوری کی پوری سوسائٹی جو ہے وہ انڈر سرویلنس آ گئی ہے کیونکہ جب ہم انٹر نیٹ پر جو بھی کرتے ہیں وہ کسی نہ کسی جگہ پر ریکارڈ ہو رہی ہوتی ہے اور لوگ اس کو اینا لائز کرکے ہمارے بارے میں عجیب و غریب انفارمیشن حاصل کر سکتے ہیں۔

ایجوکیشن خاصی چینج ہورہی ہے خاص طور پر ڈسٹنس لرننگ ایجوکیشن جو ہے وہ خاصی اور عام ایجوکیشن بھی دونوں کو خاصا فائدہ ہورہا ہے انٹرنیٹ کی مدد سے دونوں کو فائدہ ہورہا ہے انٹرایکٹیو کانٹیکٹ کی وجہ سے یہ بہتر ہو رہے ہیں انفارمیشن گیدرنگ جو ہے وہ بھی انٹرنیٹ اور کمپیوٹنگ کی وجہ سے خاصی بہتر ہوگئی ہے تو اب ہمارے پاس زیادہ ٹائم ہے کہ ہم اس کو اینا لائز کر سکیں۔ یعنی پہلے جو ٹائم لگایا کرتے تھے انفارمیشن کو غسل کرنے میں یہاں اکٹھا کرنے میں اب ہم اس ٹائم کو مشن کو اینا لائز کرنے میں استعمال کر سکتے ہیں۔

ٹیلی میڈیسن ایک ابھرتا ہوا فیلڈ ہے کہ ڈاکٹر چائے جہاں مرضی ہو مریض جہاں پے مرضی ہو وہ آپس میں انٹرنیٹ کے ذریعے یا کمپیوٹنگ کے ذریعے کر کے ایک دوسرےکے مسائل کو حل کر سکتے ہیں ۔ اور آخر میں بعد میں ہی کی تھی کہ جناب پروگرس تو ہونی ہے فیوچر تو کریڈٹ ہونا ہے اور آپ نے ہی کرنا ہے۔ میری درخواست صرف یہی ہے کہ کچھ بھی کرنے سے پہلے اس کے امپیکٹ کے بارے میں ضرور سوچیں کہ اس سے دنیا میں کیا فرق پڑے گا برا بھی اور اچھا بھی یہ بھی ہے کہ جن لوگوں نے ایٹم بم بنایا تھا وہ شاہد پاگل ہو گئے تھے جب انہوں نے پہلی دفعہ ایٹم بم کا استعمال کرتا تھا انہیں نہیں پتا تھا کہ ان کی اس ایجاد سے اتنی زیادہ تباہی آ سکتی ہے تو بات کہنے کی صرف یہی ہے کے اثرات کے بارے میں ضرور سوچیں تو جناب یہ تو بات کی پچھلی دفعہ کی آج ہم بات کریں گے اپنے پروفیشن کے بارے میں کمپیوٹنگ کے پروفیشن کے بارے میں۔

آج ہم بات کریں گے ان رولز کے بارے میں جو کمپیوٹر پروفیشنل کے ان کی ریسپانسبلٹی سکے ہیں اس کے علاوہ ایک اور چیز بھی ہم ڈسکس کریں گے کہ ہم یہ دیکھیں گے کہ بعض ایتھی کل سچویشنز کے بارے میں جو کمپیوٹر پروفیشنل میں کری ایٹ ہوتی ہیں ارومیہ سوچیں گے کہ ان حالات میں ہم اپنے آپ کو مدد کر سکتے ہیں کیسے اپنے آپ کو ٹرین کر سکتے ہیں کہ ان پر کیسے ٹریکی سیچوایشن سے عام پتھر سے بہتر فیصلہ دے سکے۔ تو سب سے پہلے میں آپ سے ایک سوال پوچھنا چاہوں گا وہ آئی ٹی کے بارے میں ہے آئی ٹی کا خاصا تذکرہ سنتے ہیں آئی ٹی سٹینڈز فار انفارمیشن ٹیکنالوجی سے مراد کیا ہے؟ اس طرح کا کام کیا جاتا ہے آئی ٹی میں؟

ایٹی جو ہے یہ گروپ آف ٹیکنالوجی ہے یہ کوئی ایک ٹیکنالوجی نہیں ہے یہ مختلف ٹیکنالوجیز کا ایک مجموعہ ہے جس کی مدد سے ہم انفارمیشن کو کیپچر کرتے ہیں پروسیس کرتے ہیں اور ٹرانسمٹ کرتے ہیں اور یہ انفارمیشن جو ہوتی ہے یہ ڈیجیٹل فارمیٹ میں ہوتی ہے یہ الیکٹرانک فارمیٹ ہوتی ہے تو وہ پراسیس جس کے ذریعہ ہم انفارمیشن کو کیپچر کرتے ہیں پروسس کرتے ہیں اور اس کو ٹرانسمٹ کرتے ہیں یہ ساری کی ساری چیزیں ان کو ملاکر ہم کہتے ہیں کہ یہ انفارمیشن ٹیکنالوجی ہے۔ جب ہم سب کمپوننٹس کے بارے میں بات کریں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے وہ میرے خیال میں تین ہے ایک تو دوسرا کمپیوٹر انجینئرنگ ہے تیسرا ٹیلی کام انجئنر نگ ہے کوئی تین چیزیں ہیں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے سب کمپوننٹس اور ایک اور چیز جس کے بارے میں آپ نے سنا ہو گا وہ ہے سوفٹ ویر انجینرنگ لیکن اس کو میں کمپیوٹر سائنس کا ہی ایک حصہ سمجھتا ہوں۔

تو سوال یہ ہے کہ آج ٹھیک ہے ہم نے کمپیوٹر پروفیشن کی لیکن اس سے پہلے ہمیں یہ معلوم کرنا ہے ایک کمپیوٹر پروفیشنل کون ہوتا ہے ؟ یہ کون ہوتا ہے کمپیوٹر پروفیشنل وہ شخص ہوتا ہے جو انوالو ہوتا ہے سافٹ ویر بنانے میں ہارڈ ویئر بنانے میں یا اس کو منٹیننس کرنے میں۔ تو جو لوگ یہ کام کرتے ہیں انہیں ہم کلاسیفائی کرتے ہیں بطور کمپیوٹر پروفیشنل میں کمپیوٹر سائنٹسٹ اس میں سوفٹ وئیر انجینئر بھی شامل ہیں اس میں کمپیوٹر انجینئر بھی شامل ہیں اور کچھ ٹیلی کام انجینئرز ہیں وہ بھی کمپیوٹنگ لفظ کے زمرے میں آتے ہیں آج ہم ان سب کے بارے میں تو بات نہیں کر سکتے بلکہ اس کے بھی ایک چھوٹے سے سب گروپ کے بارے میں بات کریں گے تو آج مصارف یو ٹی پروفیشنلز کی بات نہیں کریں گے اس کا ایک سب گروپ ہے صرف اس کے بارے میں بات کریں گے اور وہ سب روپے سافٹ ویئر ڈویلپر تھا یعنی ایسے لوگ جو ایسے آگنائزیشن کے لیے کام کر رہے ہیں جو صرف ایک چیز کرتی ہیں یعنی سوفٹ ویئر ڈیویلپمنٹ اور اس میں بھی ہم اپنے آپ کو مزید محدود کریں گے چھوٹی سی آگنائزیشن کے بارے میں بات کریں گے ایسی آرگنائزیشن جس میں تقریبا سو کے قریب کٹنگ پروفیشنلز کام کرتے ہو تو ہمارے سکیل پر یعنی پاکستان کے سکیل پہ یہ ایک ریزن ایبل سائز ہے بلکہ یہ ایک آپ کے ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن ہے لیکن بین الاقوامی سطح پر یہ خاصی چھوٹی آرگنائزیشن سمجھی جائے گی لیکن آج ہم اسی کے بارے میں بات کریں گے۔

ہم اپنے آپ کو سمجھائیں گے کہ اس میں کس کس طرح کے کمپیوٹنگ پروفیشنلز اور وہ کیا کام کرتے ہیں۔ یعنی کیا کیا رولز ہیں اور ان رولز کی کیا کیا ریسپانسبلٹیز ہے۔ دوسری بہت سی اور میڈیسنس کی طرح کمپیوٹنگ آرگنائزیشنزمیں بھی ٹیمز ہوتی ہیں۔ یعنی آرگنائزیشن جو ہے وہ ٹیمز کا ایک کلیکشن ہوتی ہے یا مجموعہ ہوتی ہے تو جناب یہاں پہ یہ جو سو لوگوں کی آنکھ نایزیشن ہے اس میں ایک تو ہے ایگزیکٹیو ٹیم اس کے علاوہ ایک بزنس ڈیولپمنٹ کی ٹیم ہے۔ آرکیٹیکچر نئی ٹیکنالوجی ٹرانسفر کی ٹیم ہے کنفیگریشن مینجمنٹ کی ٹیم ہے پراسیس کی ٹیم ہے کوالٹی ایشورنس کی ٹیم ہے سپورٹ کی پی کی ہے اور اس کے علاوہ کچھ ڈیویلپمنٹ ٹیمز ہیں یعنی کمپنی میں جتنے پروجیکٹ چل رہے ہوتے اتنی ہی اس میں یہاں پر میں نے آپ کو صرف چار ڈویلپمنٹ دکھائیں یہاں پر ابھی تو چار ہیں لیکن ایک آرگنائزیشن میں کبھی چار کبھی پانچ کے پیچھے ایک بھی ساتھ پراجیکٹ کے حساب سے دی جاتی ہے اس نے چند سال میں تین سے لے کے سات تک یہاں پہ ڈیولپمنٹ ٹیمز رہی ہیں ان ٹیمز کا جو سائز رہا ہے پچھلے چند سالوں میں وہ سات سے پینتیس تک رہی ہیں ۔ پراجیکٹ کے سائز اور اس کی کمپلیکسٹی کے مطابق ان کا سائز چھوٹا یا بڑا رہا ہے ۔ یا تین لوگ ہوتے ہیں کہ چار ہوتے ہیں کہ دس ہوتے ہیں پینتیس کی ٹیم سے بڑا پراجیکٹ ابھی تک نہیں ہوا اور یہ پینتیس کی ٹیم ہے یا اور جو لارج ٹیمز ہوتی ہیں ان کے سب گروپس ہوتے ہیں یعنی یہ ٹیمز مزید سب گروپس میں تقسیم ہوتی ہیں اور ہوتا یہ ہے کہ لوئسٹ لیول کی ٹیمز جو ہوتی ہیں ان میں عموماً سات سے زیادہ لوگ نہیں ہوتے اگر سات سے زیادہ لوگ ہو تو اس ٹیم کو مینیج کرنا شاید آسان نہیں ہوتا وہ اس کو اب مزید سب کو ایڈ کر دیتے ہیں تو بجائے اس کے دس آدمیوں کی ایک ٹیم رکھیں بجائے اس کے کیا آپ اس کے دو حصے کر دیں 1.4 کی ایک شق یہ پانچ کی دوسری بھی پانچ کی وغیرہ ۔ ان ان ٹیموں کا کام کیا ہوتا ہے ان ٹیموں کا کام یہ ہوتا ہے کہ وہ اسٹارٹ کرتے ہیں سپیسیفیکیشن سے یاد ہے جب ہم نے سوفٹ ویئر ڈیویلپمنٹ کی بات کی تھی تو اس کے کچھ مختلف فیزز کی بات کی تھی تو جب سپیسیفکیشنز طے ہو جاتی ہیں تب جا کے اس ڈیویلپمںٹ ٹیم کا کام شروع ہوتا ہے اور یہ اس کو اینڈ تک لے کر جاتے ہیں یعنی آخر تک جب تک کسٹمر کے پاس جا کر وہ پراجیکٹ ڈیلیور نہیں ہو جاتا وہاں پر چل نہیں پاتا تو یہ سارے کا سارا کام ایسی بھی سپیسیفکیشن سٹیپ سے لے کر آخری سیکٹر ڈیویلپمنٹ ٹیم یاد آتا ہے اس سے اوپر والا سٹیپ یعنی سپیسفکیشن لکھنا اور اس سے پہلے کہ اس ٹیکسی وہ کمپنی کے سینئر یا ایگزیکٹیوز جو ہے وہ لکھتے ہیں اب میں آپ کو دکھاتا ہوں کہ فرض کریں ایک ٹیم ہے وہ ایک چھوٹا سا پراجیکٹ کر رہی ہے اس کا سٹرکچر کیسا ہوگا ۔ اس میں جو کی آدمی ہوتا ہے وہ تو ایک ٹیم لیڈ ہوتا ہے اس کے بارے میں تھوڑی سی بات میں بعد میں کروں گا لیکن اس ٹیم لیڈ کو کچھ ڈیویلپرز جو ہوتے ہیں وہ رپورٹ اور یہ ٹیم لیڈ صاحب جو ہیں یہ رپورٹ کرتے ہیں پراجیکٹ مینجر کو اس کے علاوہ ایک آرکیٹکٹ صاحب جو ہیں ان سے بھی ان کی خاصی گپ شپ رہتی ہے ۔ کیونکہ چھوٹا پراجیکٹ ہے تو باقی لوگ تو فل ٹائم اویل ایبل ہیں لیکن آرکٹیکٹ صاحب اور پراجیکٹ مینجر صاحب جو ہیں وہ پارٹ ٹائم ہیں ۔ کہنے کا مقصد یہ کہ یہ والے پروجیکٹ مینجر صاحب جو ہیں وہ اس پراجیکٹ کے علاوہ اور بھی کچھ پراجیکٹ ہینڈل کر رہے ہیں یہ آرکٹیکٹ صاحب اس پراجیکٹ کے علاوہ اور بھی ایک آدھا پروجیکٹ ہینڈل کر رہے ہیں یہ پراجیکٹ مینجر صاحب جو ہیں یہ جو ایگزیٹیو ٹیم ہے اس کو اپڈیٹ کرتے رہتے ہیں اور اس کے علاوہ جو کلائنٹ ہے اس کے پروجیکٹ مینجر کو بھی رپورٹ کرتے رہتے ہیں کہ کیا ہو رہا ہے اور کس طرح ہو رہا ہے اور اگر ٹیم کو کسی انفارمیشن کی ضرورت ہے تو وہ پراجیکٹ مینجر صاحب جو ہیں وہ کلائنٹ کے پراجیکٹ مینجر صاحب سے مانگتے ہیں اسی طرح کلائنٹ کے پراجیکٹ مینجر صاحب انہیں اگر کسی نور میشن کی ضرورت ہو تو وہ ڈائریکٹ ہیں ان لوگوں سے بات نہیں کرتے وہ سیدھے صرف پروجیکٹ مینیجر جو اس ٹیم کا ہے اس سے ہی بات کرتے ہیں اب ہم دیکھتے ہیں کہ یہی وہ کچھ کی لوگ جو آپ کو نظر آئے تھے ان کی ریسپانسبلٹیز کیا ہیں ۔ ان کا پروفائل کیا ہے سب سے پہلے ہم بات کرتے ہیں پروجیکٹ مینیجر کی ان کا کام جناب بڑا سادہ سا ہے انہوں نے پروجیکٹ کو پلان کرنا ہوتا ہے اور پھر اس کو ٹریک کرنا ہوتا ہے لیکن کا مطلب یہ ہے کہ پلاننگ تو ہو گئی ہیں لیکن اب تک چل کام رہے وہ کس طرح ہونا ہے اور اس کو ہم ٹریکنگ کہتے ہیں اور اس کے علاوہ یہ بھی کہ پروجیکٹ کی پلاننگ میں ریسورسز ڈیفائن ہوتی ہیں کہ ہمیں اتنے کمپیوٹر چاہیے اس نے سروسز چاہیے بیس تو ان پروجیکٹ مینجر صاحب کا کام ہی ہوتا ہے کہ ان ریسورسز کا کسی طرح انتظام کر کے دیں اس کے علاوہ ان کے کام کا ایک کی رول یہ بھی ہے کہ ان کا کام کلائنٹ ریلیشن شپ مینجمنٹ کا ہے یعنی کلائنٹ کو خوش رکھنا کمیونی کیشن کے ذریعے اس کو بتاتے رہنا کہ اس کے پروجیکٹ کا کیا حال ہے کلائنٹ اگر کوئی کوئسچن ہے تو ان کو ان کا جواب دینا لائٹ اگر پراجیکٹ میں کچھ چینج کروانا چاہتا ہے تو اس کو مینیج کرنا یہ سارے کام پروجیکٹ مینجر صاحب کے ہوتے ہیں یہ جو پروجیکٹ مینجر صاحب ہوتے ہیں ان کا کم از کم پانچ سال کا ٹیم لیڈر کا ایکسپیریئنس ہوتا ہے اس کے بعد کہیں جا کے یہ عموما پروجیکٹ مینجر بنتے ہیں انہوں نے عموما پروجیکٹ مینجمنٹ کے کچھ کورسز بھی کیے گئے ہوتے ہیں کیونکہ پروجیکٹ مینجمنٹ ایک سکل ہے جو آپ بڑی آسانی سے نہیں سیکھ سکتے۔ اس کے لیے بہتر یہ ہوتا ہے اس کے لیے سہل یہ ہوتا ہے کہ آپ کچھ پروفیشنل پراجیکٹ مینیجمنٹ کی کورس کر لیں جو ایکسپرٹس آپ کو سکھائیں تاکہ آپ کو پراجیکٹ مینجمنٹ کا کام آجائے کچھ نالج آپ میں ٹرانسفر ہو سکے اور اس کے ذریعہ سے بہتر پروجیکٹ مینجمنٹ کر سکیں۔ انہوں نے عموماً ایسے کچھ کورس کر رکھے ہوتے ہیں ان کے پاس ڈگری عموماً ٹیکنیکل ہوتی ہے۔ یا پھر ان کے پاس ٹیکنیکل ماسٹر ڈگری ہوگی یا پھر ان کے پاس ٹیکنیکل بیچلر ڈگری ہوگی اور اس کے علاوہ انہوں نے ایم بی اے کیا ہوگا تو ان کے پاس عموما کوئی ایڈوانس ڈگری ضرور ہوتی ہے اب ہم بات کرتے ہیں آرکیٹیکٹس صاحب کی ان کی کیا ریسپانسبلٹی ہوتی ہے ان کا پورٹ فولیو کیسا ہوتا ہے ؟

آرکیٹیٹ صاحب جو ہیں ان کے پاس جب بھی کوئی نیا پروجیکٹ آتا ہے تو اس کے لئے جو بھی اپروپری ایٹ ٹیکنالوجی ہوتی ہے اس کو کے سلیکٹ کرتے ہیں یہ ان کی ریسپانسبلٹی ہے کہ مناسب ٹیکنالوجی کو سلیکٹ کریں اس کے علاوہ پروجیکٹ کا جو ڈیزائن ہوتا ہے جو ہائی لیول آرکیٹیکچرل ڈیزائن ہوتا ہے وہ بھی یہی سلیکٹ کرتے ہیں اور اس کے بعد یہ پروجیکٹ کو تھوڑا سا مانیٹر بھی کرتے ہیں یعنی کہ جو ہم نے ڈیزائن کیا تھا وہی چل رہا ہیں کی عجیب و غریب سی چیزیں تو نہیں روع ہو گئیں۔ تو یہ کام ہے آرکیٹیکٹ صاحب کا۔ ان کا بھی کم از کم دس سے پندرہ سال تک ڈیویلپمنٹ کا ایکسپیریئنس ضرور ہوتا ہے اور اس کے علاوہ ان کے پاس ان ڈیپتھ نالج ہوتی ہے دو سے تین ڈومین ایریاز کی ڈومین ریا سے مراد ہے کہ کمپیوٹر سائنس ہیں لیکن اسے چیزیں تو آپ اور لوگوں کے لیے بنا رہے ہیں بینکنگ کے لیے بنا رہے ہیں میڈیسن کے لیے بنا رہے ہیں ٹیلی کام کے لئے یا کسی ای کامرس کی ویب سائٹ کے لئے بنا رہے ہیں تو یہ ڈومینز ہیں تو ان کے پاس دو تین ڈومینز کا ان ڈیپتھ نالج ضرور ہوتا ہے اس کے علاوہ ان کا دو تین ٹیکنالوجیز کا بھی ان ڈیپتھ ایکسپیرینس ہوتا ہے ان کے پاس ڈگری بھی عموماً ایڈوانس ہی ہوتی ہے اور وہ ٹیکنیکل ہوتی ہے ماسٹر یا پی ایچ ڈی وغیرہ ۔ اس کے بعد جناب ٹیم لیڈ صاحب کے بات کرتی ہے ٹیم لیڈ جو ہوتے ہیں وہ بھی پلاننگ اور ٹریکنگ کرتے ہیں ٹیم لیڈ صاحب ایک طرح سے پراجیکٹ مینجر انڈر ٹریننگ ہوتے ہیں ۔ تو یہ بھی اپنی طرف سے کچھ پلاننگ اور ٹریکنگ کرتے ہیں یہ ہر ریسورس یعنی ہر ڈیویلپر جو ان کے پاس ہے اس کی ایک لحاظ سے پلاننگ اور ٹریکنگ کرتے ہیں پھر اس کا خلاصہ سر بنا ہے یہ شاید پراجیکٹ مینیجر کو پیش کرتے ہیں اور وہ پھر اس سے آگے کمیونیکیٹ کرتے ہیں اور پھر ان کی ریسپانسبلٹی میں ڈیٹیلز ڈیزائن بھی شامل ہے ۔ اور وہ پھر اسے آگے کمیونیکیٹ کرتے ان کی ریسپانسبلٹی میں ڈیٹیلز ڈیزائن بھی شامل ہے دیکھیے جو ہائی لیول ڈیزائن ہے جو آرکیٹیکچر ڈیزائن ہے وہ تو آرکیٹیکٹ کی ہے اس کے علاوہ جو ڈیٹیل ڈیزائن وہ ٹیملیٹ میں ڈویلپ کرنا ہے اس کے علاوہ ان کی ایک اور ریسپانسبلٹی ہے کہ ان کے پاس جو ڈیولپر ہیں ان کی پروفیشنل کروتھ کو انشور کرنا بھی ان کی ذمہ داری میں شامل ہے کہ ان کے ساتھ جو ڈویلپرز کام کر رہے ہیں وہ بہتر ہوتے جائیں ان کے دن بہ دن سکل بہتر ہوتی جائے یہ بھی ٹیم لیڈ ہی کی ذمہ داری ہے اور اس کے علاوہ یہ بھی کہ اگر ٹین چھوٹی ہے اگر تین یا چار لوگوں کی ٹیم ہیں تو ٹیم لیڈ صاحب یہ جو اوپر والے کام ہیں ان کے علاوہ بھی کچھ ڈیولپمنٹ کا کام بھی کرتی ہیں کچھ منٹیسنکا کام بھی کرتے ہیں کچھ ٹیسٹنگ بھی کرتے ہیں یہ صاحب جو ہوتے ہیں ٹیم لیڈ بننے سے پہلے انہوں نے کم از کم پانچ سال ضرور ڈیویلپر کے طور پر کام کیا ہوتا ہے اوربعض اوقات سے بھی زیادہ ۔ ان کی انٹر پرسنل سکلز جو ہیں یعنی ان کے لوگوں سے کمیونیکیٹ کرنے کی جو انٹر پرسنل سکلز ہیں وہ بہت اچھی ہوتی ہے ان کی جو ریٹرن اینڈ اورل کمیونیکشن ہے وہ بہت اچھی ہوتی ہے اس کے علاوہ ان کی پلاننگ سکل بھی بہت اچھی ہوتی ہے اس کے علاوہ ان کی ڈیزائن سکل بھی اچھی ہوتی ہے تو اگر آپ ایک ڈیویلپر ہیں اور ٹیم لیڈ بننا چاہتے ہیں تو اپنی پلاننگ سکل بہتر کریں اپنی انٹر پرسنل سکلز بہتر کریں ۔ تو آپ کے چانسیز ٹیم لیڈ بننے کے بہتر ہو جاتے ہیں آخر میں رہ جاتے ہیں ڈیویلپر ان کا کام ہے ڈیٹیل ڈیزائن کو تیار کرنا ہے کوامپلیمنٹ کرنے اور اس کی یونٹ ٹیسٹنگ بھی کرنی ہے ڈویلپرز جو ہیں ان کے پاس عموما ٹیکنیکل بیچلر ڈگری ہوتی ہے سم ٹایمز ایک ایڈوانس ڈگری بھی ہوتی ہے تو یہ تھی ایک چھوٹی سی ٹیم اور اس میں جو لوگ ہیں ان کے رولز اور ان کی رسپانس بلٹیز اب ذرا ایک بڑے سے بڑے پروجیکٹ کی بات کر لیتے ہیں ۔اس پراجیکٹ میں پچھلے پراجیکٹ کی نسبت ذرا زیادہ لوگ ہیں تو جس طرح میں نے آپ کو پہلے بتایا تھا کہ جب ٹیم ذرا بڑی ہو تو اس کی سب ٹیمز بنا لیتے ہیں لیکن اس میں بھی پراجیکٹ مینجر عموماً ایک ہی ہوتا ہے ۔ عموماً پراجیکٹ آرکیٹکٹ بھی ایک ہوتا ہے لیکن ٹیمز ایک سے زیادہ ہوتی ہیں اس کا مطلب ہے کہ آپ کچھ سب ٹیمز بناتے ہیں اور ہر سب ٹیم کا ایک ٹیم لیڈ بھی ہوتا ہے تو یہاں پہ جو میں آپ کو دکھا رہا ہوں اس میں تین ایسی سب ٹیمز ہیں ایک میں سات لوگ ہیں دوسری میں چار اور تیسری میں تین ڈیویلپرز ہیں تو یہ ذرا کمپلیکس پراجکٹ تھا اس لئے ہم نے اس کی سب ٹیمز بنا دیں باقی اس میں براجیکٹ مینیجر کا رول وہ تقریبا وہی ہے لیکن یہاں پر تھوڑا سا کمپلیکس رول ہے ان کا کہ نہ صرف انہوں نے ایگزیکٹیو ٹیم سے بات کر نی ہے کلائنٹس پراجیکٹ مینجرز سے بات کرنی ہے اس کے علاوہ انہوں نے ان تینوں ٹیم لیڈز سے بھی بات کرنی ہے ان کو بھی آپس میں کو آرڈینیٹ کرنا ہے اکثر ہوتا یہ ہے کہ سب ٹیم ون کا کام شاید ٹیم ٹو کی پراگریس پر منحصر ہوتا ہے تو ان کو ان لائن رکھنا ، ان کو ریسورسر مہیا کرنا یہ پراجیکٹ مینجر صاحب کی ذمہ داری ہوتی ہے ۔

اسی طرح سے آرکیٹکٹ صاحب کا کام بھی تھوڑا سا زیادہ ہوتا کہ انہوں نے ایک ہائی لیول ڈیزائن تیار کیا اور پھر اسے تین حصوں میں تقسیم کر دیا اور اس کو تینوں ٹیمز میں دے کر اس کی کوالٹی کو مینٹین رکھنا آرکیٹیکٹ کا کام ہے ۔تو جناب ہم نے اب بات کر لی دو طرح کی ڈیویلپمنٹ ٹیمز کی، چھوٹی ڈیویلپمنٹ ٹیم کی اور بڑی ڈیویلپمنٹ ٹیمز کی اب ذرا باقی جو ٹیمز ہیں ہماری آرگنائزیشن میں اس کی بھی بات کرتے ہیں ۔ کس کمپنی میں ایگزیٹیو ٹیم جو ہے اس کے تین ممبر ہیں یہ ہائیسٹ پیڈ ممبرز ہوتے ہیں جن کی سیلری باقی لوگوں سے زیادہ ہوتی ہے موسٹ امپارٹنٹ ممبر آف کورس چیف ایگزیکٹیو آفیسر ہوتے ہیں ۔ یہ صاحب ان کے پاس بہت ساری سی سکلز ہوتی ہی ملٹی پر کو اسکلزہوتی ہیں ان کا کام یہ ہوتا ہے کہ انہوں نے کمپنی کا ایک ویژن سا بنانا ہوتا ہے یہ کمپنی کیا ہے اور اس کمپنی کو کیا ہونا چاہیے یہ ویژن بنانا تم تک ٹرانسفر کرنا یہ ان کی ایک اہم ذمہ داری ہے کے لوگوں کو ایکسائٹڈ رکھتے ہیں ان کے بارے میں یہ بھی ان کی ایک کا ذمہ داری ہوتی ہے۔

ان صاحب کی پبلک ریلیشنز کی بہت اچھی ہوتی ہے اور ایک اور ان میں خوبی ہوتی ہے وہ یہ کہ یہ اچھے ٹیلنٹ کو بہت جلدی سپاٹ کر لیتے ہیں۔ دوسرے ممبر جو اس ٹیم کے ہیں وہ ہیں چیف آپریٹنگ آفیسر سی او او صاحب۔ یہ صاحب جو ہیں یہ ڈے ٹوڈے آپریشنز کے لیے رسپانسبل ہیں روز بروز جو کام اور آتا ہے اس کو سنبھالنا ان کا کام ہوتا ہے ان کے آرگنائزیشنل اور پلاننگ سکلز بہت اچھی ہوتی ہیں۔

تیسرے نمبر پر جو صاحب ہوتے ہیں وہ ہے چیف آف مارکیٹنگ اینڈ سیلز آفیسر بڑی کمپنیوں میں دو لوگ یہ کام کرتے ہیں اور چھوٹی کمپنی میں اب یہ کام کرتے ہیں یعنی مارکیٹنگ بھی کرتے ہیں اور سیلز کے ڈپارٹمنٹ کو بھی دیکھتے ہیں ۔ ان کا کام یہ ہے کہ کمپنی کا امیج اچھا بنائے اور اس کے علاوہ کمپنی میں کام بھی لے کر آئیں ۔ سو کمپنی میں جا کام آتا ہے ہے وہ عموماً یہ صاحب لے کر آتے ہیں اور اس میں سی ای او صاحب ان کی مدد بھی کرتے ہیں ۔ ان میں ایک خاص بات جو ہونا بہت ضروری ہے وہ یہ ہے کہ دس پر سن ہیز ٹو بی ویری انوویٹو۔ انوویشن کی وجہ سے یہ جو کام لا رہے ہیں اس کی تعداد میں اور اس کے لئے جو پیسے مل رہے ہیں اس کی تعداد میں اضافہ کر سکتے ہیں۔
بڑے کو منانے کے لیے آپ کو یونیکلی بہتر ہونا پڑتا ہے آپ کو یونیکلی انوویٹیو ہونا پڑتا ہے۔ تو یہ صاحب اس چیز کی ذمہ داری لیتے ہیں کمپنی کو پریزنٹ کرتے ہیں اور کمپنی میں کام لے کر آتے ہیں ایک اور ٹیم جو ہے وہ ہے بزنس ڈیولپمنٹ کی ٹیم یہ بہت چھوٹی سی ٹیم ہوتی ہے اس میں ایک یا دو یا تین ممبرز ہوتے ہیں ان کا کام کیا ہوتا ہے کہ کوئی صاحب یا کوئی کمپنی کوئی کام کروانا چاہتے ہیں تو اس کے لیے جو پرپوزل بناتے ہیں وہ یہ بزنس ڈیویپمنٹ کی ٹیم کے لوگ بناتے ہیں ۔ یہ جو ٹیم ہے اس کے ممبر میں ملٹی پل سکلز کا ہونا ضروری ہے ان میں ٹیکنیکل جلد بھی ہونی چاہیے ان میں بزنس اسکلز بھی ہونی چاہیے۔ ان میں اچھی ریٹن اور اورل کمیونیکیشن سکلز بھی ہونی چاہیے عموماً یہ لوگ جو ہوتے ہیں ان کی ڈگریاں دونوں ہوا کرتی ہیں اور بزنس کی بھی تو آ جائیں گے فل ایچ ڈی کچن اگر یہ اتنا زیادہ انہوں نے میچ ویڈیو میں یہ کچھ تک میسج کرتی ہے قاری حنیف ڈار کوئی ایک میں نے ایڈ کیا ہے جبکہ یہ بھی نہیں وہ بھی نہیں ہے جی میں ٹھیک ٹھاک ہے وہ دیکھ رہی ہو جب اس کو اپڈیٹ نہیں نہیں کافی زیادہ پرابلم ہو گیا تھا اب آپ کیا ریکارڈ میں سکندری رہ گئی تھی کہ میں ایسی ہیں جو اگر کوئی چیز ہے کی بورڈاگر ٹائپ کے لوگ ہوتے ہیں انکو بزنس کا بھی پتہ ہوتا ہے اور ٹیکنیکل سائیڈ کا بھی کافی پتہ ہوتا ہے اس سے اگلی جو ٹیم ہے اس کا ہم ذکر کرنا چاہیں گے وہ مشتمل ہوتی ہے شارپیسٹ ٹیکنیکل مائنڈز کے اوپر ۔ یہ ہے ہماری آرکیٹیکچر کی ٹیم جس میں دو ممبرز ہوتے ہیں بعض اوقات تین بھی ہو جاتی ہے اور یہ پروجیکٹ کے لیے ڈی پیو ٹ کیے جاتے ہیں کہ جناب یہ صاحب ہیں یہ اس پراجیکٹ کے لیے کام کریں گے تو جب وہ کام ختم ہو جاتا ہے تو وہ واپس اپنی ٹیم میں آجا تے ہیں بعض اوقات اس ممبرز ایک سے زیادہ پراجیکٹس کے بھی بیک وقت آرکیٹکٹ ہوتے ہیں یعنی وہ ایک سے زیادہ پراجکٹس کو بھی ہینڈل کر رہے ہوتے ہیں شرط یہ ہے کہ وہ زیادہ کمپلیکس نہ ہوں۔

نیکسٹ جناب ہم بات کریں گے کنفگریشن مینجمنٹ ٹیم کی اس میں بھی دو یا تین ممبر ہوتے ہیں ان کا کام بڑا دلچسپت ہوتا ہے وہ یہ کہ کمپنی جو بھی کام پروڈیوس ہوتا ہے چاہے وہ کوڈ ہو یا پروگرام ہو یا ویب سائیٹ ہو یہ اس کی ٹریکنگ کرتے ہیں یعنی اول تو یہ ایک ایسا پروسیس بناتے ہیں کہ روزانہ جو چیزیں بنتی ہیں ان کا ریکارڈ رکھا جا سکے اور اس ریکارڈ کو ایک لحاظ سے یہ ٹریک کرتے ہیں تو فرض کریں کہ آپ آج یہ کہتے ہیں کے سوا سال پہلے اس پروجیکٹ پر فلاں دن جو کام کیا تھا وہ مجھے بتائیں تو یہ ٹیم اس کا جواب دے سکتی ہے۔ تو ایک لحاظ سے جتنا اور جو کچھ بھی آپ کی کمپنی میں پروڈیوس ہوتا ہے اس کا ریکارڈ رکھتے ہیں اور اس کو ٹریک کرتے ہیں۔

پراسیس ٹیم جو ہوتی ہے اس میں ایک یا دو اس سے زیادہ ممبرز نہیں ہوتے۔ ان کا ایک خاص مقصد ہوتا ہے وہی ہوتا ہے کہ کمپنی کا جو سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ کا پراسس ہے یا جس پر اسے سے کمپنی میں سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ ہوتی ہے اس کو مانیٹر کرتے ہیں اور وقت کے ساتھ ساتھ اس کو بہتر سے بہتر بناتے ہیں اہل کرتے ہیں ٹیم ممبرز کی اور ٹیمز کی کہ وہ کو زیادہ بہتر بنا سکیں یعنی وہ کام جو ایک ہفتے میں کر سکتے ہیں انہیں وہ طریقہ بتائے کہ جس کے ذریعے وہ ایک ہفتے سے کم ٹائم میں کر سکیں کم کاسٹ پر کیا جا سکے۔
یا پھر بہتر کوالٹی سے کیا جا سکے یا تینوں کو ملا کر کیا جا سکے تو یعنی کا مقصد یہ ہے کہ کمپنی کے سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ کو اس طرح بنانا کہ چیزیں ٹائم پر کم کاسٹ کے ساتھ ہوں اور بہتر طریقے سے ہوں۔ کو بنانے میں کم سے کم پیسے لگیں

اس کے بعد ہم بات کریں گے کوالٹی اشورنس ٹیم کی ڈیویلپمنٹ ٹیم کے بعد شاید کسی کمپنی کی یہ سب سے بڑی ٹیم ہو تی ہے۔ اس کمپنی میں تقریبا سو کے قریب کمپیوٹر پروفیشنل ہیں جس میں سے تقریبا 20 کوالٹی ایشورنس ٹیم کے ممبر ہیں اس کے بارے میں یہ ہوتا ہے کہ جتنے آپ کے ڈیولپر ہو تیسرا حصہ اس کی ٹیم کے لوگوں کی تعداد کا حصہ ہوتی ہے تو جیسے کر اب تک ساٹھ ڈویلپر ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ آپ کی کوالٹی ایشورنس ٹیم میں تقریبا 20 ممبر ہوں گے ان لوگوں کا کام یہ ہوتا ہے کہ یہ ایشور کریں کوالٹی ان چیزوں کی جو کمپنی میں پروڈیوس ہو رہی ہے اس سے مراد یہ ہے کہ جو چیزیں کمپنی میں بن رہی ہیں کیا وہ وہی کام کر رہی ہیں جو نہ کرنا چاہیے یا وہ کوئی اور کام کر رہی ہیں۔ وہ وہی کام کر رہی ہیں جو نہیں کرنا چاہیے تھا تو انہیں پاس کر دیتی ہیں اور اگر وہ وہ کام نہیں کر رہی تو انہیں واپس بھیج دیتی ہے ڈویلپر ٹیم کے پاس کہ جناب اس کو دوبارہ بہتر بنا کے ٹھیک طریقے سے دوبارہ سے کام کریں تو اس کمپنی سے کسٹمر کے پاس کچھ نہیں جاتا جب تک کہ کوالٹی ایشورنس ٹی ٹیم اس کو پاس نہ کر دے ۔

اور ان کے کام کرنے کا انداز ہے یہ ہوتا ہے جب بھی کوئی پراجیکٹ کمپنی میں آتا ہے تو وہ ایک یا دو یا تین آدمی جو اس ٹیم کےممبر ہوں وہ ڈیپیوٹ کیے جاتے ہیں اس پراجیکٹ ٹیم میں ، یعنی وہ دو تین لوگ کوالٹی ایشورنس کرتے ہیں اس پراجیکٹ کی اور جب وہ پراجیکٹ ختم ہو جاتا ہے تو وہ کسی نئے کام پر شروع ہو جاتے ہیں۔ ٹیکنالوجی ٹرانسفر کی جو ٹیم ہے اس کا سائز بڑا اور چھوٹا ہوتا رہتا ہے جب کمپنی کے پاس کام زیادہ ہو تو اس کا سائز کم ہو جاتا ہے اور جب کم کمپنی کے پاس کام نہ ہو تو اس ٹیم کا سائز بڑھ جاتا ہے ۔ اس ٹائم کا کام یہ ہے کہ جو جو نئی ٹیکنالوجی جا رہی ہیں جو جو نئی پروڈکٹس آرہی ہیں جو نئے نئے سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ کے نئے پراسیس آرہے ہیں ان کو ایویلویٹ کریں ان کو اینا لائز کریں اور دیکھیں کہ وہ کیا کرتے ہیں کیسے کرتے ہیں اور کیوں کرتی ہیں بعد ان میں سے جو اپراپری ایٹ ہیں اس آرگنائزیشن کے لیے ان کو اڈ اپ کریں ان کو کمپنی کے اندر لے کر آئیں ان کو کمپنی کے اندر انٹروڈیوس کروائے لیکن آپ نے اس میں اپنی کچھ مہارت بنانا پڑے گی اگر فرض کریں کہ اگر ایک کمپائلر آتا ہے چکنی لینگویج ہوتی ہے تو وہ اس کو سٹڈی کریں گے اس پر چھوٹے چھوٹے کچھ پراجیکٹ کرنا شروع کریں گے اور دیکھیں گے کہ کیا وہ ہماری ریکوائرمنٹ کے مطابق کام کررہی ہے تو اس کے بعد جو نئے پروجیکٹس آئیں گے ان کو امپلپیمنٹ کریں گے یا جو موجودہ پروجیکٹ سے ان کے اندر ان کو چلا کر دیکھیں گے تونئے پراسسیسس سے نئی پروڈکٹ کو نئی ٹیکنالوجی کو انٹرویوس کروانا ان کا کام ہے تو ویلویٹ کرنا اور انہیں کمپنی میں انٹرویوز کروانا ٹیکنالوجی ٹرانسفر ٹیم کا کام ہے۔

سپورٹ ٹیم جو ہے اس میں دو یا تین ممبرہوتے ہیں ان کا کام یہ ہوتا ہے کہ کمپنی اپنی کا جو ہارڈ ویئر سٹرکچر ہے جو سافٹ ویئر اور نیٹ ورکنگ کا انفراسٹرکچر ہے اس کو وقت کے ساتھ ساتھ بہتر بناتے رہتے ہیں اس کی مینٹی نینس کرنا اس کو ایکسپینڈ کرتے رہنا جس طرح بھی کمپنی کی ضروریات ہوتی ہیں چیزوں کو ایکسپینڈ کرتے رہنا ٹیم کا کام ہے یہ کیا کام کرتے ہیں یہ لوگ ورک سٹیشنز ، سرورز سافٹ وئیرز، نیٹ ورکنگ وغیرہ کا خیال بھی رکھتے ہیں کہ اگر ان میں کوئی خرابی آجاتی ہے تو اس کو ٹھیک کرتے ہیں نئی چیز میں انسٹال کرنی ہو وہ کرکے دیتے ہیں اس کے علاوہ کمپنی کیا سارے کا سارا نیٹ ورک کا جو کام ہے سوئیچیز ہیں اور جو انٹرنیٹ کنکشن ہے اس کا خیال رکھتے ہیں اس کے علاوہ اگر آپ کوئی کام کر رہے ہیں اور اگر نئے سوفٹ وئیر کی ضرورت ہے تو عموما یہ لوگ اسے انسٹال کرکے دیتے ہیں اگر آپ نے کوئی نیا ویب سرور کو ٹیسٹ کر کے دیکھنا ہے یا کسی پراجیکٹ کے لیے آپ کو نئے ویب سرور کی ضرورت ہے تو آپ ان سے کہتے ہیں کہ جناب آپ لانا سافٹ جو ہے وہ آ کے میری اس مشین پر انسٹال کر دیں ۔ اس کے علاوہ ان کا ایک اور کام ہوتا ہے وہ یہ کہ یہ آپ نے نیٹ ورک کی سیکورٹی کو بھی مانیٹر کرتے ہیں اور یہ دیکھتے ہیں کہ کوئی غلط حرکت تو نہیں ہو رہی کوئی ہے کہ کوئی باہر کی چیز تو نہیں آ گئی اور آ گئی ہے تو اس کے بارے میں مناسب اقدامات کرنا ان کا کام ہے۔ تو یہ جناب ٹیم کمپنی کا جتنا بھی ہارڈ ویئر سافٹ ویئر کا سٹرکچر ہے اس کا دھیان رکھنا ان کو منٹین کرنا اس کو ایکسپینڈ کرنا یہ اس ٹیم کا کام ہے تو جناب اس کے ساتھ ہم پہلے پارٹ کے اختتام کی طرف آتے ہیں یعنی ہم نے دیکھ لیا کہ جو سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ کی آگنائزیشن ہے اس میں جس طرح کے لوگ ہیں جس طرح کی ٹیمیں ہیں ان کے کیا پروفائل ہوتے ہیں اور ان کی کیا ریسپانسبلٹی ہوتی ہیں وہ کیا کام کرتے ہیں اور ان کو کس ٹائپ کا ایکسپیرئنس ہونا ضروری ہے ۔ اب ہم تھوڑا سا چینل سوئچ کریں گے اب ہم بات کریں گے اور فیشن کی پروفیشنل ایتھکس کی لیکن اس سے پہلے ہم دیکھ لیں گے کہ پروفیشنل ایتھکس سے سے ہماری مراد کیا ہے۔
اٹس اے کلیکشن آف ہیوریسٹکس .
کہ ان ہیورسٹکس کو جب کوئی فالوکرتے ہیں سب لوگ تو اس سے معاشرہ بہتر ہو جاتا ہے ۔ ہمارازندگی کا گزارنے کا طریقہ بہتر کرنے کے لئے ہم جن رولز کو فالو کرتے ہیں ان کو ایتھکس کہتے ہیں۔ مجھے ایتھکس بہت پسند ہیں کیونکہ ان کی وجہ سے میری زندگی بہت آسان ہو جاتی ہے ۔ کیونکہ میں ایتھکس کی مدد سے اپنی فیصلہ سازی کرتا ہوں فرض کریں میں ایک ہیوریسٹک ہے جس پر بلیو کرتا ہوں اور وہ ہیوریسٹک ہے آلویز سپیک ٹروتھ، یعنی ہمیشہ سچ بولنا۔ اگر آپ اس میں بلیو کرتے ہیں اور اپنی لائف کو اس کے مطابق ڈھالتے ہیں تو جب بھی آپ نے کچھ بولنا ہو گا تو آپ کو سوچنا نہیں پڑے گا اور دوسرے لوگ جو اس میں بلیو نہیں کرتے انہیں ہر بات کرنے سے پہلے سوچنا پڑے گا کہ سچ بولوں کہ جھوٹ بولوں تو اس طرح آپ کی لائف جو ہے وہ بہت سادہ اور سہل ہو جاتی ہے اور ایتھکس کے نہ ہونے کی وجہ زندگی مشکل ہو جاتی ہے ،
پروفیشنل ایتھکس جو ہیں وہ ایک ایتھکس کی کیٹگری ہے اور ظاہر ہے ہم یہاں کمپیوٹنگ کی فیلڈ سے ریلیٹڈ پروفیشنل ایتھکس کو دیکھنا چاہ رہے ہیں یہ جو پروفیشنل ایتھکس ہیں ان کی اوئیر نیس حاصل کرنے سے ہمیں کچھ فائدہ ہوتا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ آج کل کی ورک انوائرمنٹ وقت کے ساتھ ساتھ پیچیدہ ہو تی جا رہی ہے پہلے ہمیں روز مرہ میں جتنے فیصلے لینا پڑتے اب اس سے زیادہ لینا پڑتے ہیں تو اس پراسیس کو آسان کرنے کے لئے یہ جو ایکسٹرا پیچیدگی آ گئی ہے اس کو کم کرنے کے لئے یہ پروفیشنل ایتھکس ہماری مدد کر سکتے ہیں تو اس کا فائدہ ہے کہ ہماری پروفیشنل لائف آسان ہوجاتی ہے کیونکہ ہم بعض رولز کو فالو کر رہے ہوتے ہیں جس سے ہماری فیصلہ سازی آسان ہو جاتی ہے اب ہم کرتے یہ ہیں کہ بعض حالات کے بارے میں بات کرتے ہیں اور میں ان پر اپنا فیصلہ نہیں دوں گا بلکہ آپ سے کہوں گا کہ آپ اس کے متعلق فیصلہ کریں ۔ تو سب سے پہلہ جو ہے وہ ہے ایل لیگل یوز آف سافٹ وئیر ۔ تو ہوتا یہ ہے کہ ایک صاحب ہیں انہوں نے کچھ سافٹ وئیر لی اور اس مقصد کے لئے لی کہ میں اسے تھوڑا سا ٹیسٹ کر کے دیکھ لوں کہ یہ میرے لیے ٹھیک ہے یا نہیں وہ انہوں نے لی تو 7 دن کے لئے تھی لیکن اس کو استعمال کیے جا رہے ہیں یہ جو بیہیویئر ہے کہ ڈیویلپر ہے اس کی اجازت کے بغیر اس کو استعمال کرتے چلے جا رہے ہیں تو آپ بتائیں کہ کیا ان کا یہ کنڈکٹ ایتھیکل ہے ؟ یا نہیں ۔ تو اس سلسلے میں آپ کو بہت اچھے پروفیشنلز گائیڈ کر سکتے ہیں ۔
دوسری سچوئیشن ہے وہ ہے ویپوروئیر کی ۔ ہوتا یہ ہے کہ ایک چھوٹی سی کمپنی ہے وہ زبردست قسم کی ایک پروڈکٹ بناتے ہیں اور پھر جب وہ اسے لانچ کرنے والے ہوتے ہیں تو ایک بڑی کمپنی جو ہوتی ہے جو ان کی کمپیٹیٹر ہے اسے پتہ چل جاتا ہے کہ بھئی یہ ایک بڑی زبردست کمپین شروع کر دیتی ہیں افواہیں پھیلانا شروع کر دیتے ہیں کہ جناب اس طرح کی پروڈکٹ تو ہم بھی بنا رہے ہیں اور عنقریب اسے لانچ کرنے والے ہیں ۔ تو آپ بس تھوڑی دیر ویٹ کر لیں ہماری پراڈکٹ آنے والی ہے اسے آپ لے لیجئے گا ۔ اب ظاہر ہے جو پوٹینشکل کسٹمرز ہیں وہ ظاہر پروڈکٹ کو بڑی کمپنی سے لینا پسند کرتے ہیں جن کی اور بھی بہت ساری پروڈکس اویل ایبل ہوتی ہیں ان سے چیزیں لینا پسند کرتےہیں کیونکہ اس سے ان کا خیال ہے کہ ان کا رسک کم ہوتا ہے۔
بڑے ویل ویل نون ڈیلر سے کوئی چیز خریدنا عموماً لوگ اس کم رسکی سمجھتے ہیں بجائے اس کے چھوٹے ریٹیلرز سے لینے کے۔ تو جناب یہ جو پوٹینشل کسٹمرز تھے انہوں نے اس چھوٹی کمپنی سے جو بہت زبردست سی پراڈکٹ بنائی تھی اس کو نہیں خریدا انہوں ںے کہا کہ چلو ہم چند ماہ ویٹ کرتے ہیں اور پھر یہ جو بڑی سی کمپنی ہے اس سے جب یہ پروڈکٹ ملے گی تو ان سے ہم یہ خرید لیں گے ۔ اب ہوا کیا، سارے کے سارے پوٹینشل کسٹمرز بڑی کمپنی کے جھانسے میں آ گئے چھوٹی کمپنی نے بڑی اچھی چیز بنائی تھی اور اس میں ان کا خرچہ بھی کافی ہوا تھا اور اب ان کی بکری ہو نہیں رہی تھی تو انہوں نے جو اس میں انوسٹمنٹ کی تھی وہ پوری ہو نہیں رہی تھی جس کے نتیجے میں یہ ہوا کہ کچھ عرصے کے بعد وہ کمپنی بند ہو گئی۔
اب جناب یہ جو بڑی کمپنی تھی نہ تو انہوں نے وہ پراڈکٹ بنانی تھی نہ بنائی اور کچھ عرصہ کے بعد انہوں نے کہہ دیا کہ وہ پروڈکٹ ہم نے کینسل کر دی اب ہم وہ نہیں بنائیں گے۔
تو آپ کے خیال میں یہ جو بڑی کمپنی کا بیہیوئیر ہے کیا ہے ٹھیک ہے ؟ کیا ایک چھوٹی کمپنی کا نقصان کرانا ایتھیکل لحاظ سے ٹھیک ہے ؟
کیا آپ کو لگتا ہے کہ یہ درست ہے اور کاروبار میں تو ایسا ہوتا ہی رہتا ہے ۔
کیا یہ فئیر ہے ؟ کیا یہ ایتھیکل ہے ؟
پروفیشنل ایتھکس جو ہیں وہ ایسی سچیوایشن میں آپ کی ہیلپ کرتے ہیں وہ ایسی صورتحال کو ہینڈل کر کے آپ کو بتا سکتے ہیں کہ یہاں پر کیا ہونا چاہئے؟ وٹ از دا رائیٹ تھنگ ٹو ڈو۔
تیسری صورتحال جو ہے اس کے بارے میں ہم بات کرتے ہیں یہ ہے وسل بلور سچوایشن ۔
اس میں ہوتا یہ ہے کہ بھولا صاحب جو ہیں وہ ناسا کے لئے ایز کنٹرکٹر کام کر رہے ہوتے ہیں انہیں ایک سافٹ وئیر میں بڑا سا بگ نظر آتا ہے جس سے اس سافٹ وئیر کو بڑا نقصان ہو سکتا ہے تو وہ جا کر اس کے بارے میں اپنے باس مرفی صاحب کے پاس جاتے ہیں اور انہیں جا کر بتاتے ہیں کہ جناب یہ بہت بڑا ایشو ہے اس کے بارے میں کسی کو بتائیں ۔ وہ کہتے ہیں چپ کسی کو نہیں بتانا اس کے بارے میں اگر ہم نے اس کے بارے میں کسی کو بتایا تو ہم لیٹ ہو جائیں گے اور پروجیکٹ لیٹ ہونے کی صورت میں کینسل ہو جائے گا اور اگر ایسا ہوا تو میں تمہیں نوکری سے نکال دوں گا۔
تو وہ بھولا صاحب ڈر کر چپ کر جاتے ہیں اور بیٹھ جاتے ہیں اور اس بارے میں کسی کو نہیں بتاتے۔ تو جناب آپ یہ بتائیں کہ بھولا صاحب کا یہ جو بیہیوئیر ہے کیا یہ ایتھیکلی درست ہے؟
یا غلط ہے۔

کیا آپ ایک ایسے شخص کو اپنی کمپنی میں ہائیر کریں گے لیکن کیونکہ باس نے منع کر دیا ہے وہ کسی کو نہیں بتا رہے ۔ ایک بندہ کہہ سکتا ہے کہ بڑا لائل آدمی ہے جیسا باس نے کہا ہے ویسا کر رہا ہے ۔ لیکن کیا یہ ایتھیکل بیہیور ؟ پروفیشنل ایتھکس جو ہیں وہ اس سلسلے میں آپ کو بتاتے ہیں کہ ایسی صورتحال میں کیسے بیہیو کرنا ہے ۔ ایک اور بات یہ بھولا صاحب جو ہیں وہ ناسا کے لئے کام کرنے سے پہلے ایک اور کمپنی میں کام کرتے تھے جس کا نام ہے بھولو سافٹ اور اس کی ایک کمپیٹیٹر کمپنی تھی جس کا نام تھا سپر سافٹ
بھولا صاحب نے وہاں جا کر جاب شروع کر دی ۔ ہوا یہ تھا کہ وہاں جب انٹرویو ہو رہا تھا سپر سافٹ میں اس دوران میں بھولو سافٹ کے جتنے بھی ٹریڈ سیکرٹس انہیں معلوم تھے انہوں نے وہ بتا دیئے اور شاید اسی بناء پر کہ یہ صاحب اتنی انفارمیشن لے کر آ رہے انہیں سپر سافٹ نے نوکری دے دی۔ تو یہ ٹریڈ سیکرٹس دینے سے انہیں پتا تھا کہ ان کی پرانی کمپنی کو نقصان ہو گا پھر بھی انہوں نے وہ نئی کمپنی کو بتا دیے۔ آپ کا اس بارے میں کیا خیال ہے کہ کیا ان کا بیہیور صحیح ہے کیا آپ ایسے شخص کو حائیر کریں گے اپنی کمپنی میں جو آپ کے سیکرٹس کسی اور کو بتا دے گا جا کر۔ کیا آپ کیا اس پر سپر سافٹ یہ نہیں سوچے گی کہ یہ جو اپنی پرانی کمپنی کے سیکرٹس مجھے بتا رہا ہے کل کو نئی کمپنی میں جا کے میرے سکرٹس انہیں بتا دے گا کیا وہ کمپنی ایتھی کل ہے سپر سافٹ؟ کیا وہ ایتھی کل وے میں بیہیو کر رہے ہیں کہ وہ ایک ایسے آدمی کو ہائر کر رہی ہیں کسی اور کے ٹریڈ سیکرٹس میں بتا رہا ہے تو یہاں پہ دو کلپرٹس نظر آتے ہیں ایک تو وہ شخص اور دوسرا وہ کمپنی جو اس کو ہائر کر رہی تھی آپ کا کیا خیال ہے کہ یہ دونوں جو انٹیٹیز ہیں کیا یہ دونوں ایتھی کل وے میں بیہیو کر رہے ہیں پروفیشنل ایتھکس جو ہے اس میں ایسی سیچویشن کو ڈسکس کیا جاتا ہے ایسی صورتحال کے لیے جوابات میں اس میں دیئے جاتے ہیں کہ ایسی صورتحال میں کس طرح کمپنی کیسے کام کرتی ہے اور انفرادی طور پر کیسے کام کیا جاتا ہے۔

کے جس میں نے کام کیا ہے ان کے بارے میں مجھے کیسے بھی اب کرنا چاہیے اور یا پھر یہ کہ کمپنی ہے اور اس میں ایک صاحب آتے ہیں تو بطور کمپنی مجھے کیسے بی ہیو کرنا چاہیے اگر وہ مجھے یہ آفر کرتے ہیں کہ وہ دوسری کمپنی کے جس میں سے وہ آئے ہیں اس کی سیکرٹ مجھے بتا دیں تم مجھے کیسے بیہوو کرنا چاہئے پروفیشنل ایتھکس ایسی صورتحال کے بارے میں بتاتے ہیں کہ اس کو کیسے ڈیل کیا جائے گا تو ہمارے پاس آج ٹائم تو نہیں ہے کہ ان چیزوں کو ہم ڈسکس کریں جن کے بارے میں پروفیشنل ایتھکس بات کرتا ہے یہ ایسی صورتحال ہے اس سے کل کو آپ کو بھی دیکھنا پڑے گی فیس کرنا پڑے گی تو بجائے اس کے کہ تب سوچیں تو ابھی آپ اس بارے میں اپنے نالج کو بڑھائے کہ ایسی صورتحال میں کس طرح بیہیو کرنا چاہیے تو جناب آج ہم نے بات کی اپنے پروفیشن کے بارے میں کمپیوٹنگ کے پروفیشن کے بارے میں کیا اس میں کس طرح کے لوگ ہوتے ہیں ان کے کس طرح کے رولز ہوتے ہیں ان کی کس طرح کی ریسپانسبلٹی ہوتی ہیں اور ان کا پروفائل کیسا ہے تو جو رول میں نے ابھی آپ کو بتائے ان میں سے کون سا رول آپ کو بھی پسند ہے آپ میں سے کچھ ایسے ہوں گے جو سی ای او بننا چاہیں گے ، مارکیٹنگ مینجر بننا چاہیں گے ، کچھ ٹیم لیڈ بننا چاہتے ہیں وہ لوگ جو یہ سمجھتے ہیں کہ ان کے انٹر پرسنل سکلز اچھے نہیں ہیں تو ان کے لئے آرکیٹیکٹ والا ٹریک زیادہ بہتر ہے ۔

لیکن اگر آپ مارکیٹنگ میں آتے ہیں یا ڈیویلپمنٹ فیز سے گزر کر آپ مینجمنٹ فیز پر آنا چاہتے ہیں تو اس کے لئے آپ کو اپنے انٹر پرسنل سکلز کو کافی بہتر بنانا پڑے گا۔ اپنی کلائنٹ ہیںڈلنگ اور اس طرح کی دیگر سکلز کو بہت زیادہ امپروو کرنا پڑے گا اور دوسرا جو ہے وہ آرکیٹیکٹ کا فیلڈ ہے کیونکہ اس ٹریک میں یو آر ٹرائینگ ٹو ایکسل انڈر ڈومین سائٹ۔
میرے خیال میں یہ بننا زیادہ مشکل ہے ۔ اس کی وجہ یہ ہے کمپنیز میں یہ بہت کم تعداد میں ہوتے ہیں ۔ توکمپیوٹنگ پروفیشن کے بعد ہم نے بات کی تھی کمپیوٹنگ پروفیشن کے جو ایتھکس ہیں ان کا میں ذکر کیا تھا ہم نے یہ ڈسکس کیا تھا کہ یہ کیوں ضروری ہیں تو اس کا جواب نہیں دیا تھا کہ اس سے ہماری زندگی کافی آسان ہو جاتی ہے یہ جو خاصی کمپلیکس حالات بن گئی ہیں وہ اس کو ڈیل کرنے میں آپ کو کافی سہولت ہو جاتی ہے فیصلہ سازی کرنے میں بہت آسانی ہوتی ہے آپ کی زندگی بہت آسان ہو جاتی تو جناب یہ تو تھی آج کی بات آج ہم نے بات کی کمپیوٹنگ کے پروفیشن کے بارے میں نیکسٹ ٹائم ہم بات کریں گے آن ڈیوٹی کے بارے میں ہم ویژوال ایز کرنے کی کوشش کریں گے کے آج سے پانچ دس بیس سال کے بعد پچاس سو سال کے بعد کمپیوٹنگ کی فیلڈ کیسی ہوگی۔ کمپیوٹر کیسے ہوں گے وہ کیا کام کر رہے ہوں کے ان کا ہماری لائف میں کیا امپیکٹ ہوگا تو جناب فیوچر آف کمپیوٹنگ ول بی آور نیکسٹ ٹاپک فار نیکسٹ ٹائم
اپنا خیال رکھیے گا اپنے دوستوں کا خیال رکھئے گا۔ اللہ حافظ

Leave a Comment